Mon. May 16th, 2022

روس کی مسلط کردہ جنگ لڑنے والا ملک یوکرین کو بین الاقوامی طور پر اب تک جو سب سے زیادہ کرنسی ملی ہے وہ کرپٹو کرنسی ہے۔

روس کے یوکرین پر حملے کے بعد ایک جانب جہاں امریکا اور برطانیہ سمیت دیگر مغربی اور یورپی ممالک اور اداروں نے نے روس پر پابندیاں عائد کیں وہیں پر یوکرین کیلیے امداد کا اعلان بھی کیا گیا جو مالی شکل میں بھی تھی اور وہ یوکرین کو ملنا بھی شروع ہوگئی ہے۔

اگر آپ یہ سوچ رہے ہیں کہ یوکرین کو سب سے زیادہ امریکی ڈالر میں مدد ملی ہے یا برطانوی پاؤنڈ میں تو آپ غلط ہیں کیونکہ یوکرین کو اب تک ملنے والی مالی امداد میں سب سے زیادہ کرپٹو کرنسی ہی ملی ہے۔

گزشتہ ماہ روسی حملے کے بعد یوکرین سے تعلق رکھنے والی فلاحی تنظیموں اور سرکاری اداروں نے عطیات کیلیے کرپٹو ایڈریسز کو جاری کردیا تھا۔

کرپٹو کرنسی کے پیچھے کارفرما بلاک چین ٹیکنالوجی پر کام کرنے والی کمپنی ای لپٹک کے مطابق یوکرین کو عطیات میں ملنے والے بٹ کوائن، ایتھریم اور دیگر کرپٹو کرنسی کی تعداد میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہوتا جارہا ہے، ای لپٹک کی تازہ جاری رپورٹ کے مطابق اب تک یوکرین کو 60 ملین ڈالر مالیت کی ڈیجیٹل کرنسی امداد کی مد میں مل چکی ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق یوکرینی حکام ڈیجیٹل اثاثوں کو اب تک تو صرف طبی امداد کیلیے استعمال کیا جارہا ہے لیکن جلد ہی اسے فوجی ساز وسامان کے ساتھ اشیائے خورونوش اور ایندھن کی خریداری میں بھی استعمال کریں گے۔

یوکرین کے نائب وزیر دفاع الیکس بورن یاکو کا اس سے متعلق کہنا ہے کہ ہم نے غذا، ایندھن، نائٹ ویژن چشمے اور بلٹ پروف جیکٹس کو ان اشیا کی فہرست میں شامل کردیا ہے جو امداد میں ملنے والی کرپٹو کرنسی سے خریدی جاسکیں گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *