Wed. May 18th, 2022

ایک کرکٹ ویب سائٹ کے مطابق لیسٹر میں انگلینڈ اور نیوزی لینڈ ویمنز کرکٹ ٹیم کے درمیان تیسرے ایک روزہ میچ سے قبل نیوزی لینڈ ویمنز ٹیم کی مینجمنٹ کے ایک رکن کو پیغام ملا جس میں ٹیم کے ہوٹل کو بم سے اُڑانے کی دھمکی دی گئی تھی۔

 

خبر کے مطابق ٹیم کے جہاز کو بھی بم سے اُڑانے کی دھمکی دی گئی تھی جس کی وجہ سے پیر کو شیڈولڈ پریکٹس سیشن منسوخ کردیا گیا ،تاہم حکام نے ان دھمکیوں کو خبر میں بتایا گیاہے کہ دھمکیوں کے باوجود بھی تیسرا ون ڈے شیڈول کے مطابق ہوگا لیکن نیوزی لینڈ ویمنز ٹیم کی پلیئرز کو اب بھی تحفظات ہیں ۔

واضح رہے کہ اس سے قبل نیوزی لینڈ کی مینز ٹیم نے اینٹلیجنس رپورٹس کی بنیاد پر پاکستان کا دورہ منسوخ کردیا تھا تاہم ٹیم کو کیا خطرہ تھا، کیسی تھریٹ تھی یہ نہیں بتایا گیا ۔

نیوزی لینڈ کے بعد انگلینڈ نے بھی پاکستان آنے سے انکار کردیا ہے۔

انگلینڈ میں نیوزی لینڈ ویمنز ٹیم کو ملنے والی دھمکی پر نیوزی لینڈ کرکٹ کا ردعمل

نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کے مطابق انگلش کرکٹ بورڈ کو نیوزی لینڈ کرکٹ کے حوالے سے دھمکی آمیز ای میل موصول ہوئی تھی۔

نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈکا کہنا ہے کہ دھمکی میں براہ راست نیوزی لینڈ ویمنز ٹیم کا تذکرہ نہیں تھا لیکن اسکی بھرپور تحقیقات کی گئی تھیں تحقیقات کے بعد اس نتیجے پر پہنچے تھے کہ دھمکی غیر مصدقہ تھی۔

نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈکے مطابق ٹیم لیسٹر پہنچ چکی ہے اور اس کی سکیورٹی کو بڑھا دیا گیا ہے جبکہ پریکٹس سیشن منسوخ ہونے کی خبر درست نہیں، آج ٹریول کرنا تھا، پریکٹس شیڈول نہیں تھی۔غیرمصدقہ قرار دے دیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *