Wed. May 18th, 2022

واشنگٹن: امریکی دوا ساز کمپنی موڈرنا نے کووِڈ نائنٹین کی نئی اور سب سے خطرناک قِسم ’اومیکرون‘ کے خلاف ویکسین کی بوسٹر شاٹ تیار کرنے کا اعلان کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق فارماسوٹیکل کمپنی موڈرنا نے کہا ہے کہ اس نے اومیکرون کے خطرے سے نمٹنے کے لیے 3 طرح کی حکمت عملی تیار کی ہے، ان میں ایک موجودہ ویکسین کی ’بوسٹر ڈوز‘ کا استعمال بھی شامل ہے۔

موڈرنا کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر اسٹیفن بینسل نے اومیکرون کی تبدیل شدہ شکل کو باعثِ تشویش قرار دیا، انھوں نے کہا ہم اومیکرون کا مقابلہ کرنے کے لیے اپنی حکمت عملی پر جلد سے جلد عمل درآمد کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے کرونا کی نئی قسم کو باعث تشویش قرار دیتے ہوئے اسے omicron کا نام دیا ہے، اس ویریئنٹ کا تکنیکی نام B.1.1.529 ہے، ڈبلیو ایچ او کے مطابق اس نئی قسم میں کووِڈ نائنٹین نے وسیع سطح پر اپنی ہیئت اور شکل تبدیل کر لی ہے، جس سے اس وائرس میں بار بار انفیکشن ہونے کا خطرہ دیگر تمام اقسام سے زیادہ ہو گیا ہے۔

یورپی یونین کے ڈرگ ریگولیٹرز کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کی نئی قسم کا جائزہ لیا جا رہا ہے، یہ کہنا قبل از وقت ہے کہ اس کے لیے نئی ویکسین کی ضرورت ہوگی۔

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کی ڈائریکٹر کرسٹالینا جارجیوا نے ٹوئٹر پر لکھا کہ براعظم افریقہ کے جنوبی خطے میں ویکسینیشن میں مدد نہ کرنا ناکامی ہے، ابھی تک یہاں صرف 4 فی صد آبادی کو ویکسین لگائی جا سکی ہے، جس سے ہم سب تیزی سے پھیلنے والے نئے وائرس کے خطرے سے دوچار ہوگئے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *